How to Stay Energized and Maximize the last 10 Days of Ramadan

Ramadan is a month of fasting each and every day of this holy month is no less than a blessing. Muslims make most of this time and earn a lot of Allah’s mercy, forgiveness and blessings. We should attain a higher level of spirituality in Ramadan. If you want to make your Ramadan spiritually and physically productive, you must give your body the essential fuel to maintain its functioning. Ramadan is divided into three Ashra’s out of which the last Ashra or last days required Muslims to maximize their prayers as they are most blessed days of this holy month. Laylatul Qadar lies in the last 10 days of Ramadan which starts from 21st and ends on 29th or 30th of

فاروقِ اعظم ؓ اور ایک بُڑھی | Farooq E Azam Aur Aik Burhiya

حضرت عمر ؓ ایک مرتبہ اپنی رعیت کے حالات کا مطالعہ فرمانے کے لیے گشت لگا رہے تھے۔ ایک بڑھیا عورت کو اپنے خیمہ میں بیٹھے دیکھا۔ آپ ؓ اس کے پاس پہنچے اور اس سے پوچھا اے ضعیفہ ! عمر ؓ کے متعلق تمہارا کیا خیال ہے؟ وہ بولی خدا عمر ؓ کا بھلا نہ کرے۔حضرت عمر ؓ بولے! یہ تم نے بددعا کیوں دی؟عمرؓ سے کیا قصور سرزد ہوا ہے؟ وہ بولی عمر نے آج تک مجھ غریب بڑھیا کی خبر نہیں لی اور مجھے کبھی کچھ نہیں دیا۔

حضرت عمر ؓ بولے مگرعمر ؓ کو کیا خبر کہ اس خیمہ میں امداد کی مستحق ایک ضعیفہ رہتی ہے۔ وہ بولی

حج کے پانچ دن- Hajj Ke 5 Din

حج کے پانچ دن حج کا دوسرا دن ۔9 ذی الحجہ صبح مستحب وقت فجر کی نماز پڑھ کر لبیک، ذکر اور درودشریف میں مشغول رہیں۔ جب دھوپ جبل شبیرپر آجائے جو مسجد خیف کے سامنے ہے تو ناشتہ وغیرہ سے فارغ ہو کر عرفات کی طرف روانہ ہو

دوسرا دن ۔9 ذی الحجہ صبح مستحب وقت فجر کی نماز پڑھ کر لبیک، ذکر اور درودشریف میں مشغول رہیں۔ جب دھوپ جبل شبیرپر آجائے جو مسجد خیف کے سامنے ہے تو ناشتہ وغیرہ سے فارغ ہو کر عرفات کی طرف روانہ ہو جائیں اور ظہر سے پہلے وہاں پہنچنے کی کوشش کریں۔ صرف عرفات میں بعض معلم دو پہر کے کھانے کا انتظام کرتے ہیں اور وہ بھی سب نہیں کرتے اس

رب کے بندوں کی رب سے محبت

دنیا و آخرت کی کامیاب رب کو راضی کرنے میں ہے تمام کے تمام انبیاء علیہ السلام اور صحابہ کرام اور اولیاء عظام نے اس نعمت عظمیٰ کو حاصل کیا اپنے رب کو راضی کیا پھر ان پر انعامات کی بارشوں کا نزول ہوا، کامیابی وکامرانی نے ان کے قدموں کو چوما۔ یہ مقام ومرتبہ انہیں رب کی محبت کی وجہ سے ملا جب بندہ کسی سے محبت کرتا ہے تو اس کی ہر بات کوسر تسلیم خم قبول کرتا ہے اور یہ محبت جب رب سے ہوجائے تو پھر رب کہے آگ میں چھلانگ لگا لگا دیتا ہے ، سولی پر چڑھ چڑھ جاتا ہے، آرے کے ساتھ چِر جاچِر جاتا ہے تپتی ریت کے اوپر لیٹ جالیٹ جاتا