فاروقِ اعظم ؓ اور ایک بُڑھی | Farooq E Azam Aur Aik Burhiya

حضرت عمر ؓ ایک مرتبہ اپنی رعیت کے حالات کا مطالعہ فرمانے کے لیے گشت لگا رہے تھے۔ ایک بڑھیا عورت کو اپنے خیمہ میں بیٹھے دیکھا۔ آپ ؓ اس کے پاس پہنچے اور اس سے پوچھا اے ضعیفہ ! عمر ؓ کے متعلق تمہارا کیا خیال ہے؟ وہ بولی خدا عمر ؓ کا بھلا نہ کرے۔حضرت عمر ؓ بولے! یہ تم نے بددعا کیوں دی؟عمرؓ سے کیا قصور سرزد ہوا ہے؟ وہ بولی عمر نے آج تک مجھ غریب بڑھیا کی خبر نہیں لی اور مجھے کبھی کچھ نہیں دیا۔

حضرت عمر ؓ بولے مگرعمر ؓ کو کیا خبر کہ اس خیمہ میں امداد کی مستحق ایک ضعیفہ رہتی ہے۔ وہ بولی

حج کے پانچ دن- Hajj Ke 5 Din

حج کے پانچ دن حج کا دوسرا دن ۔9 ذی الحجہ صبح مستحب وقت فجر کی نماز پڑھ کر لبیک، ذکر اور درودشریف میں مشغول رہیں۔ جب دھوپ جبل شبیرپر آجائے جو مسجد خیف کے سامنے ہے تو ناشتہ وغیرہ سے فارغ ہو کر عرفات کی طرف روانہ ہو

دوسرا دن ۔9 ذی الحجہ صبح مستحب وقت فجر کی نماز پڑھ کر لبیک، ذکر اور درودشریف میں مشغول رہیں۔ جب دھوپ جبل شبیرپر آجائے جو مسجد خیف کے سامنے ہے تو ناشتہ وغیرہ سے فارغ ہو کر عرفات کی طرف روانہ ہو جائیں اور ظہر سے پہلے وہاں پہنچنے کی کوشش کریں۔ صرف عرفات میں بعض معلم دو پہر کے کھانے کا انتظام کرتے ہیں اور وہ بھی سب نہیں کرتے اس

رب کے بندوں کی رب سے محبت

دنیا و آخرت کی کامیاب رب کو راضی کرنے میں ہے تمام کے تمام انبیاء علیہ السلام اور صحابہ کرام اور اولیاء عظام نے اس نعمت عظمیٰ کو حاصل کیا اپنے رب کو راضی کیا پھر ان پر انعامات کی بارشوں کا نزول ہوا، کامیابی وکامرانی نے ان کے قدموں کو چوما۔ یہ مقام ومرتبہ انہیں رب کی محبت کی وجہ سے ملا جب بندہ کسی سے محبت کرتا ہے تو اس کی ہر بات کوسر تسلیم خم قبول کرتا ہے اور یہ محبت جب رب سے ہوجائے تو پھر رب کہے آگ میں چھلانگ لگا لگا دیتا ہے ، سولی پر چڑھ چڑھ جاتا ہے، آرے کے ساتھ چِر جاچِر جاتا ہے تپتی ریت کے اوپر لیٹ جالیٹ جاتا

عورت کیاہے،؟اور اسلام میں اس کی اہمیت

عورت خدا کی بڑی بڑی نعمتوں میں سے ایک بہت بڑی نعمت ہے۔ عورت دنیا کی آبادکاری اور دینداری میں مردوں کے ساتھ تقریبابرابر کی شریک ہے۔ عورت مرد کے دل سکون،روحک کی راحت، زہن کا اطمینان،بدن کا چین ہے۔ عورت دنیا کے خوبصورت چہرہ کی آنکھ ہے۔اگر عورت نہ ہوتی تو دنیا کی صورت کانی اندھی ہوتی۔ عورت۔آدم علیہ السلام و حضرت حواؑ کے سواتمام انسانوں کی ماں ہےاس لیے وہ سب کے لیےسب کے لیے قابلِ احترام ہے۔ عورت کاوجود انسانی تمدن کے لیے بے حد ضروری ہے۔ آگر عورت نہ ہوتی تو مردوں کی زندگی جنگلی جانوروں سے بدتر ہوتی۔ عورت بچپن میں بھائی بہنوں سے محبت کرتی ہے۔ شادی کے بعد شوہر سے محبت کرتی ہے۔ماں بن کر اولاد سے